Best Offer

ہندو سماج سے ایک سوال! اچھے ہندو کہاں ہیں؟

اگر ہندوازم اپنے دعووں کےمطابق عدمِ تشدد اور گاندھی واد کا مذہب ہے تو آج کے انڈیا میں پنپ رہے گوڈسے ازم کےخلاف ہندوﺅں کا گاندھی کہاں ہے؟
اب کشمیری پنڈتوں کے عنوان سے کشمیر فائل کے ذریعے جھوٹی تاریخ بیان کرکے مسلمانوں کےخلاف نفرت پھیلائی جارہی ہے
مودی کے اقتدار میں آنے کےبعد سے، مسلسل ماب لنچنگ ہورہی، جے شری رام کےنام پر کتنے مسلمانوں کا قتل کیا گیا، مسلمانوں کی شہریت چھیننے کی کیسی اعلیٰ سطحی کوششیں ہیں، دھرم سنسد کےذریعے مسلمانوں کا نام و نشان مٹانے کی باتیں ہورہی ہیں سینکڑوں ہزاروں سادھو سنت اور پنڈت مسلمانوں کو ختم کرنے کے لیے جمع ہورہے ہیں، ہندو نوجوانوں میں مسلمان لڑکیوں کو ستانے اور نشانہ بنانے کے جذبات بھڑک رہے ہیں ۔
مجھے تلاش ہے ان ہندوؤں کے کسی بڑے شنکر آچاریہ کی، برہمن پجاری پنڈت اور ان کے بابا گرو دیو کی جو ہندوﺅں کے ان مظالم کےخلاف سامنے آئے، یہ ہندوﺅں کے ایسے لیڈران ہیں جن کے ایک اشارے پر حکومتیں ہل جائیں، جیسے جب کہیں مسلمان سے غلطی یا جرم ہوتاہے تو دارالعلوم اور دیگر مذہبی رہنما مل کر اس کی مذمت کرکے ثابت کرتےہیں کہ اسلام یا مسلمان کا اس سے کوئی تعلق نہیں ویسے ہی ہندوﺅں کے ایسے اعلیٰ سطحی شنکر آچاریہ جو ہری دوار، وارانسی، بنارس کے مندروں میں بیٹھے ہیں وہ اِن ہندوﺅں کی ہندوتوا دہشتگردی کےخلاف سامنے کیوں نہیں آرہے 2014 سے اب تک کوئی بھی سامنے کیوں نہیں آیا؟ اس کےباوجود اگر آپ ہندوﺅں کو ایسے صریح انسانیت سوز مسلم مخالف جرائم سے خود ہی اُن کا وکیل بن کر الگ کرنا چاہتےہیں تو یہ آپکا جِگر ہے کیونکہ آپ ان مظالم کو شاید محسوس نہیں کرپا رہےہیں، لیکن ہم تب تک ہندوﺅں کی طرف سے مطمئن نہیں ہوسکتے جب تک کہ ان کے اصلی مرکزی لیڈران سامنے آکر اپنے سماج میں پنپ رہی اس ہندوتوا دہشتگردی کےخلاف سخت موقف اختیار نہیں کرتے، تب تک یہ سماج ہماری نظر میں متعفن ہی رہےگا، یہی انصاف ہے، ہندوﺅں کےساتھ بھی، ہمارے مظلوموں کےساتھ بھی۔

Check Also

میری نماز چھوٹنے کا گناہ کس کے سر پر؟

ڈاکٹر محمد رضی الاسلام ندوی آج عصر کی نماز پڑھ کر اہلیہ کے ساتھ بازار …