Best Offer

مدرسہ شمس العلوم مہتاپورمیں ایک روزہ جلسہ سیرت النبی و اصلاح معاشرہ منعقد

خدا م دین آپس میں رفیق بن کر کام کریں فریق بن کر نہیں: مولانا افضال الرحمن قاسمی

ہردوئی ( یاسرقاسمی)
مدرسہ شمس العلوم مہتاپور میں ایک روزہ جلسہ سیرت النبی و اصلاح معاشرہ منعقد ہوا، جلسے میں اکابر علمائے کرام نے اپنے مواعظ میں دینی مدارس کی اہمیت اور ان سے وابستگی پر بطور خاص زور دیا۔
بعد نماز عشاء منعقدہ جلسے میں بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے حضرت محی السنّہ نوراللہ مرقدہٗ کے خلیفہ اور مدرسہ اشرف المدارس ہردوئی کے شیخ الحدیث مولانا الشاہ افضال الرحمن قاسمی نے کہا امت مسلمہ کی دینی و روحانی ضرورت دینی مدارس اور خانقاہوں سے وابستہ ہے، ان سے دین و ایمان کی روشنی نصیب ہوتی ہے، ہر فرد کا یہ دینی فریضہ ہے کہ وہ اسلامی مدارس، علماء اور بزرگوں سے وابستہ رہ کر اپنے اور اپنی نسلوں کے دین و ایمان کی حفاظت کا سامان فراہم کرے، اپنے گھر کا ماحول دین دار بنائے، تاکہ اس کے بعد بھی یہ سلسلہ چلتا رہے اور اولاد دین و ایمان پر قائم رہے، ضلع ہردوئی کی تاریخی حیثیت پر روشنی ڈالتے ہوئے مولانا نے کہا یہ سرزمین بڑی زرخیز ہے ، بڑے بڑے علماء و فقہاء، محدثین اور اولیاء کا مسکن رہی ہے ، تاج العروس کے مصنف اور احیاءالعلوم کے شارح علامہ زبیدی رحمۃ اللہ علیہ کے بارے میں مفکر اسلام مولانا سید ابو الحسن علی ندوی رحمۃ اللہ علیہ نے فرمایا ان کے زمانے میں عالم اسلام میں ان کا کوئی ثانی نہیں تھا، وہ بلگرام کے تھے، فتاویٰ عالمگیری (فتاوی ہندیہ) کا ایک ضخیم حصہ ملا وجیہ الدین نے تصنیف کیا، جو گوپامو میں فروکش تھے، حضرت محی السنۃ مولاناالشاہ ابرار الحق ومولانا بشارت علی نور اللہ مرقدہما کی دینی و تبلیغی خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے مولانا نے بتایا ان بزرگوں نے بے پناہ مشقتیں برداشت کر کے گاؤں گاؤں دین کی روشنی پہنچائی، دس دس میل کا پیدل سفر کیا، ان حضرات نے جس سرزمین کو قربانی دے کر ہموار کیا ہے، ہم سب کی ذمہ داری ہے اس ورثے کی حفاظت کریں، ان کے مشن کو آگے بڑھائیں اور ان کے لیے دعائے خیر کریں، نصیحت کرتے ہوئے انہوں نے کہا آپ دعوت وتبلیغ،مدارس،خانقاہ غرض دین کے کسی بھی شعبے سے وابستہ ہوں آپس میں رفیق بن کر کام کریں فریق بن کر نہیں۔ جمعیت علماء ضلع ہردوئی کے صدر مولانا عبدالجبار قاسمی، مولانا آدم مصطفی فیروزآبادی نے بھی خطاب کیا، نظامت یاسر عبدالقیوم قاسمی نے کی، آغاز قاری محمد ایوب کی تلاوت قرآن اللہ سے ہوا،نعت ومنقبت کے اشعار حافظ معظم بلگرامی نے پیش کیے، مدرسہ کے ناظم اور جلسے کے منتظم مفتی جمال الدین قاسمی کی طرف سے سب کے لئے اظہار تشکر کیا گیا، جلسے میں مولانا عبد اللطیف مظاہری، مولانا محمد غفران بلگرامی، مفتی محمد بلال، حافظ تنویر احمد،مولانا توصیف الرحمن ، مفتی شہاب الدین، حافظ طریق احمد،حافظ محمد راشد ،حافظ محمد شکیل، محمد سراج، انوار احمد،مولوی محمد قاسم، محمد طلحہ،حافظ محمد پرویز سمیت بڑی تعداد میں علماء، حفاظ و عوام الناس نے شرکت کی۔

Check Also

مدرسہ معہد البشیر الاسلامی سندیلہ کی طالبہ نے 8 ماہ میں ناظرہ قرآن مجید کیا

ہردوئی: 29مارچمدرسہ معہد البشیر الاسلامی بشیر نگر ملکانہ سندیلہ کے ایک طالب علم حافظ محمد …