Best Offer

عبد الاول سنگرامپوری کے پہلے شعری مجموعہ عناقيد نجوم كا اجراء

ریاض: 21 مارچ، ہماری آواز
رياض، سعودی عرب میں جناب عبدالاول عبيدالله سنگرامپوری کے پہلے شعری مجموعہ عناقيد نجوم کے رسم اجراء کی تقریب منعقد ہوئی جس میں شہر کے علمی اور ادبی حلقہ کی ایک خاصی تعداد نے شرکت کی۔ تقریب کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا، پھر محترم عبد المبین محبوب عالم نے استقبالیہ کلمات کے ذریعہ تمام مہمانوں کا استقبال کیا، تقریب کی صدارت معروف اسلامک اسکالر شیخ عزیر ملک فلاحی حفظہ اللہ اور نظامت محترم جناب محمد اکمل نے کی۔ شیخ عزیز ملک نے اپنے صدارتی کلمات میں شاعرکو مبارکباد دیتے ہوے اسلامی موضوعات پر اشعار کہنے اور اشعار کے ثریعہ دین وملت کی خدمت کرنے کی درخواست کی۔ معروف قلمکار اور کئی کتابوں کے مصنف محترم نقی احمد ندوی نے اپنے احساسات کا اظہار کرتے ہوے کہا کہ عناقید نجوم کے شاعرکی ایک امتیازی خصوصیت یہ ہے کہ ان کے اشعار میں شاعر مشرق علامہ اقبال کی خوشبو محسوس ہوتی ہے ۔ موصوف کے بعض اشعار ایسے ہیں کہ لگتا ہے جیسے ہم علامہ اقبال ہی کے اشعار پڑھ رہے ہوں۔ معروف علمى و ادبي شخصيت ڈاکٹر عبدالرحیم نے عناقيد نجوم پر بہت تفصیلی تبصرہ پیش کیا اور شاعر کے مختلف امتیازی اوصاف کا ذکر کرتے ہوے کہا کہ عبد الاول عبید اللہ سنگرامپوری کے اشعار کو پڑھنے کے بعد ایسا محسوس ہوتا ہے کہ یہ شاعر محبت الہی اور عشق رسول میں نہ صرف گرفتار ہے، بلکہ وہ اپنی قوم کے حالات پر بھی نظر رکھتا ہے اور انھیں اپنے کلام کے ذریعہ جھنجھوڑنے کی کوشش کرتا ہے، یہی نہیں بلکہ موصوف کی بعض غزلیں اور نظمیں اس دور کے شعر وادب کا حسین شاہکار ہیں۔ اس تقریب میں معروف شاعر محترم خورشيد الحسن نير نے اپنا تاثر پیش کیا اور اپنے کلام سے بھی سامعین کو محظوظ کیا۔ ان کے علاوہ عبدالرحمن عمری، محمد عرفان خان اور نور القمر نے بھی عناقيد نجوم پر اپنے تاثرات پیش کئے۔ اس موقع پر شاعر اسد بلرامپوری نے اپنی دلکش آواز سے سامعین کو مسحور کیا۔

ریاض کی جن سرکردہ شخصیتوں نے اس تقریب میں شرکت کی ان میں وصی اللہ ندوی، مسعود عالم، ارشاد احمد خان، شاہد جمال، نعيم الحق، زہیر احمد ، کمال احمد، جنید الحسن، عبدالباسط عبدالعزیز، فخر الدين حفظہم اللہ وغیرہ شامل ہیں۔ حاضرین نے شاعر کو مبارکباد پیش کی۔ اس پروگرام میں شاعر عبدالاول عبيدالله سنگرامپوری کی کمپنی سعودی امریکن گلاس کے فائنانس مینیجر شیراز اقبال نے اپنے دوسرے رفقاء عبدالقدوس اور شفیع اللہ کے ساتھ شرکت کی اور اپنے تاثرات کا اظہار کیا۔ پروگرام کے اخیر میں جناب نعيم الحق نے انتظامیہ کمیٹی کی طرف سے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔ تقریب کے اختتام کے بعد پرتکلف عشائیہ کے ساتھ مجلس برخواست ہوئی۔